مکتوب شیخ بدیع الدین سہارنپوری: اپنے پیر و مرشد حضرت مجدد الف ثانی کی خدمت میں

مکتوب شریف حضرت شیخ بدیع الدین سہارنپوری رحمۃ اللہ علیہ (وفات ۱۰۴۲ھ)، خلیفہ حضرت امام ربانی مجدد الف ثانی رضی اللہ عنہ

یہ مکتوب آپ نے اپنے پیر و مرشد حضرت امام ربانی مجدد الف ثانی رضی اللہ عنہ کی خدمت میں بھیجا۔

زبان: فارسی

اردو ترجمہ: حافظ محمد اشرف نقشبندی مجددی

حوالہ: حضرات القدس دفتر دوم، علامہ بدر الدین سرہندی، ترتیب و ترجمہ حافظ محمد اشرف نقشبندی مجددی، قادری رضوی کتب خانہ، گنج بخش روڈ، لاہور، اشاعت دوم 2010

مکتوب شریف نیچے شروع ہوتا ہے:


احقر العباد بدیع الدین سہارنپوری، آستانۂ عالیہ میں عرض پرداز ہے کہ یہ عاجز حضور انور صلی اللہ علیہ وسلم سے خاص بشارتیں پاتا ہے۔ حضور انور صلی اللہ علیہ وسلم بڑی عنایتیں فرماتے ہیں اور نصیحتیں بھی فرماتے ہیں۔ ایک دن فرمایا کہ ”تو سراجِ ہند ہے“، اور فرمایا کہ ”مزید اطاعت کرو“۔ عالمِ غیب سے قطبیت کی بشارت بھی آتی ہے۔ اور اکثر اوقات حکمِ الٰہی سے، آنے والے واقعات کی خبر واقعے سے پہلی ہی بلا قصد دی جاتی ہے۔ اور عالمِ غیب سے ایسی عجیب و غریب بشارتیں ہوتی ہیں کہ وہ حضور والا ہی سے عرض کرنے کے لائق ہیں۔

کچھ طالبانِ صادق جمع ہو گئے ہیں اور ذکر میں مشغول ہیں اور بلند احوال سے گزر رہے ہیں۔ انہوں نے نقشبندیہ حضور کو تھوڑی سی مدت میں اپنا مَلَکہ بنا لیا ہے اور اہلِ نسبت بن گئے ہیں۔ کچھ ایسے ہیں جو فنائے جسدی سے مشرف ہو گئے ہیں۔ (اور اللہ تعالیٰ ہی احوالِ اخروی اور برزخ کو بہتر جانتا ہے)۔ اور بعض ایسے ہیں کہ ذکر کی لذّت کی خاطر گھر بار چھوڑنے پر آمادہ ہیں۔

أضف تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *