مکتوبات خواجہ معصوم سرہندی، دفتر سوم مکتوب ۲۸۔ ملا عطاء اللہ سورتی کے نام

مکتوب شریف حضرت خواجہ امام محمد معصوم سرہندی فاروقی نقشبندی رحمۃ اللہ علیہ (وفات ۱۰۷۹ھ)، فرزند و روحانی وارث حضرت امام ربانی مجدد الف ثانی رحمۃ اللہ علیہ

یہ مکتوب آپ نے ملا عطاء اللہ سورتی کے نام نصیحت کے لیے تحریر فرمایا۔

زبان: فارسی

اردو ترجمہ: مولانا سید زوار حسین شاہ نقشبندی و یگر

حوالہ: مکتوبات معصومیہ اردو ترجمہ، دفتر سوم، مولانا زوار حسین شاہ، زوار اکیڈمی پبلی کیشنز، ناظم آباد، کراچی

مکتوب شریف نیچے شروع ہوتا ہے۔


دفتر سوم مکتوب ۲۸۔ ملّا عطا اللہ سورتی کے نام اُن کو نصیحت کے بیان میں تحریر فرمایا۔


بسم الله الرحمٰن الرحيم. الحمد للهِ وسلامٌ علىٰ عِباده الَّذين اصۡطفىٰ.

فضائل مآب برادرم ملا عطاء اللہ اس جانب سے سلامِ عافیت انجام پڑھیں اور دور افتادہ دوستوں کو دعائے خیر کے ساتھ یاد کریں۔

میرے مخدوم! چند روزہ زندگی کو جو کہ بہت قیمتی ہے سب سے قیمتی اشیاء میں صرف کرنا چاہئے، اور وہ مولائے حقیقی جل سلطانہٗ کی خوشنودیوں کا حاصل کرنا ہے۔ کمرِ ہمت کو اس بزرگ کام ہیں کَس کر باندھیں، اور جو کچھ اُس کے منافی ہے اس سے الگ ہو جائیں۔ بندہ کے حق میں کمال یہ ہے کہ اس کا مولا اس سے راضی ہو اور وہ اس (اپنے مولا) سے راضی ہو۔ اس لئے مقامِ رضا تمام مقامات سے اوپر ہوا۔ اس رضا کی علامت یہ ہے کہ بندہ اس تعالیٰ شانہٗ سے راضی ہو جائے اور ارادوں اور خواہشات میں اس تعالیٰ شانہٗ کی رضامندی کے خلاف اس سے ظاہر نہ ہو، اور رنج پہنچنے کی حالت میں نعمت حاصل ہونے کی مانند کشادہ رُو رہے، اور اس کے اوامر و نواہی میں اس کی ابرو پر بل نہ آئے، اور تمام افعالِ واجبی (اللہ تعالیٰ کے افعال) میں شرح صدر کے ساتھ رہے، اور اس عزّ برھانہٗ کی قضا و قدر کے ساتھ اطاعت و تسلیم اختیار کرے۔

والسلام

أضف تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *