مکتوب خواجہ عبدالرحمٰن چھوہروی ۱۴: بنام حافظ سید احمد شاہ قادری

مکتوب شریف حضرت خواجہ محمد عبد الرحمٰن قادری چھوہروی (وفات ۱۳۴۲ھ) رحمۃ اللہ علیہ، خانقاہ چھوہر شریف، ہری پور ہزارہ، پاکستان

بنام حضرت علامہ حافظ سید احمد شاہ قادری سریکوٹی خلیفہ رنگون

حوالہ: مکتوباتِ رحمانیہ، ترتیب و تدوین ڈاکٹر طاہر حمید تنولی، انسٹی ٹیوٹ آف ریسرچ اینڈ ڈویلپمینٹ، لاہور، مارچ ۲۰۰۶

مکتوب شریف نیچے شروع ہوتا ہے:


هو الحق هو

از عبد الرحمٰن

بمحب خاص و خاص الخاص من، حضرت جناب مولوی قاری حافظ جی صاحب دام محبتكم في الله

السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ۔ روحِ کافرہ (یعنی وہ روح جو ماسوی اللہ سے مستغنی اور متوجہ الی اللہ ہو) وغیرہ قریب قرب واصلان باللہ، بامید حصول وصول سعادت وافرہ، بعالم برزخ ہے اور ہوگا اور آپ تسلی فرمانویں۔ اور زیادہ اس بے ہیچ کے خاص محبوں کو تکلیف چندہ کی نہ دیویں۔ اس بندہ کی رائے یہ ہے کہ دو ہزار روپیہ چندہ والے سے پنجسو نسخہ چھپوایا جائے۔ اگر آپ کے سب محبوں کو منظور اور پنج سو نسخہ درود شریف چھپوانے کی کمی بیشی خرچ کو موافق فرمان تاجران لاہور کے دیکھا جاوے، آئندہ ”يفعل الله ما يشآء ويحكم ما يريد“۔

اور ثانی عرض پر عرض یہی ہے کہ سب پارہ ہائے درود شریف بذریعہ رجسٹری یہاں دو وجہ کے سبب ارسال فرمانویں، ایک ہر پارہ کے اول صفحہ پر کچھ شک ہے، دوسرا سب پارہ ہا تاجران لاہور کو دکھا کر کسی معتبر آدمی کے ذریعہ فیصلہ من کل الوجوہ کرنا ہے۔ اور اگر آپ کے ساتھ فیصلہ ہو چکا ہو تو فھو المراد۔ مگر تمام پاروں کا اس طرف ارسال فرمانا آپ کا، اول صفحوں کے شک رفع کے واسطے بھی اشد ضروری ہے۔ آپ ضروری ارسال فرمانویں اور بشرط زندگی و خیر وقتے کہ درود شریف کی چھپوائی کا انتظام ہو چکا تو بفضلہٖ و کرمہٖ تعالیٰ اگر ارادہ آپ کا ہوا تو چند ایام کے واسطے اس طرف آ جانا۔ آئندہ ”يفعل الله ما يشآء ويحكم ما يريد“۔

از عبد الرحمٰن چھوہروی

و بجمیع احبّا بعد تسلیم اس جانب سے دعاء ثم الدعاء آمین یا رب العالمین۔ و خاکسار تابعدار ناکس محمد فضل سبحان کی طرف سے السلام علیکم۔

أضف تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *