مکتوب خلیفہ محمود نظامانی ۳۷۔ خلیفہ محمد ملوک چانڈیو کی طرف

مکتوب شریف حضرت شیخ خلیفہ محمود نظامانی سندھی قادری نقشبندی رحمۃ اللہ علیہ (وفات ۱۲۶۷ھ)، خلیفہ اعظم سید محمد راشد شاہ المعروف پیر سائیں روضے دھنی قدس سرہ

یہ مکتوب آپ نے اپنے خلیفہ محمد ملوک چانڈیو ولاسی والے کی طرف، دنیا اور دنیا داروں سے تعلق اور نفسانی خواہشات کی مذمت کے بارے میں فارسی میں لکھا۔

حوالہ: مکتوبات شریف حضرت خلیفو محمود فقیر (سندھی ترجمہ)، مترجم مولانا عبدالحلیم ہالیپوٹو، محمودیہ اکیڈمی، ضلع بدین، سندھ، 2003

اردو ترجمہ از طالب غفاری

مکتوب شریف نیچے شروع ہوتا ہے:


اَلۡحَمۡدُ لِلہِ الَّذِیۡ ھَدَانَا لِہٰذَا وَمَا کُنَّا لِنَھۡتَدِیَ لَوۡ لَا اَنۡ ھَدَانَا اللہُ لَقَدۡ جَاءَتۡ رُسُلُ رَبِّنَا بَالۡحَقِّ وَالصَّلٰواۃُ وَالسَّلَامُ عَلیٰ رَسُوۡلِہٖ مُحَمَّدٍ وَّ آلِہٖ وَسَلَّمَ

فقیر حقیر، ضعیف نحیف، فقیر محمود (قدس سرہ) کی طرف سے برادرم خلیفہ محمد ملوک کی طرف۔ السلام علیکم کے بعد عرض ہے کہ طالب کو چاہیے کہ اپنے دین کو دنیا کے عوض نہ بیچے، نفسانی خواہشات اور بیہودہ معاشی کاموں میں دل کو پریشان نہ کرے، اور دنیا کے سب کاموں کو اللہ سبحانہٗ و تعالیٰ کے سپرد کردے۔

بیت فارسی

سپردم بتو مایۂ خویش را
تو دانی حساب کم و بیش را

ترجمہ: میں نے اپنی ساری پونجی تیرے حوالے کردی ہے، اب کمی بیشی کے حساب کو تو ہی جانے۔

اور خود اللہ سبحانہٗ و تعالیٰ کی یاد میں مشغول رہو۔

زیادہ خیریت والسلام

أضف تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *