مکتوب پیر مٹھا ۹: بنام مولوی محمد حنیف، والدین کی خدمت

مکتوب شریف حضرت شیخ عبدالغفار فضلی نقشبندی مجددی (م ۱۹۶۴) المعروف پیر مٹھا قدس اللہ سرہ العزیز

یہ مکتوب آپ نے جناب مولوی محمد حنیف صاحب کی طرف صادر فرمایا۔

حوالہ: جماعت اصلاح المسلمین، پاکستان

مکتوب شریف نیچے شروع ہوتا ہے۔

مشفقی مولوی محمد حنیف سلمہ اللہ تعالیٰ

السلام علیکم و رحمۃ اللہ

عزیزم چند نصیحت کی باتیں گوش دل سے سنیں۔ ماں باپ کی خدمت بیٹوں پر فرض ہے۔ جیسا کہ اللہ تعالیٰ نے فرمایا ہے ”ولا تقل لھما اف ولا تنھرھما“ (ترجمہ: پس تم ان کو اُف تک مت کہو، ان کو مت جھڑکو)۔ ایک اور مقام پر فرمایا ”و بالوالدین احسانا“ (ترجمہ: ماں باپ کے ساتھ نیکی کرو)۔ ایک اور جگہ پر قرآن پاک میں حکم ہے کہ ”و اخفض لھما جناح الذل“ (ترجمہ: ان کے لئے مہربانی کے بازو کھولو)۔ افسوس صد افسوس انا للّٰہ و انا الیہ راجعون۔ آپ نے شاید قرآن مجید کی یہ آیات نہیں پڑھیں۔ ”الحذر الحذر واحفظ الایمان واحفظ الایمان ولا تتبع الشیطان ان الشیطان للانسان عدوا فاتخذوہ عدوا“۔ عزیزا ایمان کی سلامتی کی فکر کریں اور ایمان کو سلامت رکھیں، اور شیطان کی تابعداری نہ کریں۔ تحقیق شیطان انسان کا دشمن ہے، اسے اپنا دشمن سمجھیں (یعنی اس کے ساتھ دشمنی والا معاملہ کریں)۔ عزیزم اس سے ایمان کے سلب ہونے کا خطرہ ہے۔ ماں باپ کے پاؤں کی مٹی کو اپنی آنکھوں کا سرمہ بنائیں اور ان کے قدموں پر اپنا سر رکھیں اور ان کے دونوں پاؤں کو بوسہ دیں اور اپنے گناہ اور خطائیں ان سے بخشوائیں اور ان سے قصور پر روئیں اور فریاد کریں۔ ”ان اللہ غفور رحیم الان فالان“ تحقیق اللہ تعالیٰ مہربان بخشنے والا ہے۔ فورًا اسی وقت پشیمانی ظاہر کریں، ورنہ غضبِ الٰہی آپ کے لئے تیار ہے جس کا نازل ہونا آپ کے لئے لازم اور جائز ہے۔

لاشئی فقیر محمد عبدالغفار فضلی

أضف تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *